اداکار شفیع محمد شاہ کو آج ان کے مداح یاد کررہے ہیں

اردو اور سندھی زبان کے معروف اداکارہ شفیع محمد شاہ کو آج ان کے مداح یاد کررہے ہیں۔ شاہ جی کے نام سے معروف شفیع محمد شاہ یکم جنوری 1949 کو سندھ کے ضلع نوشہرو فیروزکے شہر کنڈیارو میں پیدا ہوئے۔

انہوں نے ابتدائی تعلیم حیدرآباد سے حاصل کرنے کے بعد جامعہ سندھ سے گریجویشن مکمل کی۔

شفیع محمد شاہ نے اپنے فنی کیریئر کا آغاز حیدرآباد ریڈیو اسٹیشن سے ریڈیو پریزینٹر کے طور پر کیا۔ انہوں نے 1960 کی دہائی میں ریڈیو سے نشر ہونے والے ڈراموں میں حصہ لے کر اپنی اداکاری کی صلاحیتوں کو متعارف کرایا۔

اپنے فنی کیریئر کو مزید ترقی دینے کیلئے بعد میں وہ کراچی منتقل ہوگئے اور باقاعدہ طور پر بطور اداکار اپنے فنی کیریئر کا آغاز کیا۔

انہوں نے پاکستان ٹیلی وژن کے ہدایت کار شہزاد خلیل کے ڈرامے ‘اُڑتا آسمان’ سے اپنے فن کا آغاز کیا تاہم شفیع محمد شاہ ڈرامہ ‘تیسرا کنارہ” میں اداکاری کے بعد فن کی بلندیوں پر پہنچ گئے اور ان کا نام زدعام ہوگیا۔

شفیع محمد شاہ کے مشہور ڈراموں میں چاند گرہن، ڈیرے، آنچ، بند گلاب ، نور جام تماچی، محبت خواب کی صورت اور دیگر ڈرامے شامل تھے۔

شفیع محمد شاہ نے ریڈیو، تھیٹر سے لے کر فلموں اور ٹیلی وژن تک تفریح کے تمام ذرائع میں اداکاری کی۔ اپنے 30 سالہ کیریئر کے دوران انہوں نے اردو اور سندھی زبانوں میں 500 سے زائد ڈراموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے۔

شفیع محمد شاہ 17 نومبر 2007 کو جگر کے عارضے کے باعث کراچی کے علاقے کلفٹن میں اپنے گھر میں دنیا فانی سے کوچ کرگئے۔ لیکن فن کی دنیا میں ان کا نام اور ان کا کام ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔