قرآن پاک اور صحیح بخاری کا پہلی بار کوریائی زبان میں ترجمہ

مسلمانوں کی مقدس ترین کتاب قرآن پاک اور حدیث کی کتاب صحیح بخاری کا پہلی بار کورین زبان میں ترجمہ کیا گیا ہے.

یہ ترجمہ جنوبی کوریا کے ایک مقامی مسلمان ڈاکٹر حامد چوئی یونگ کِل نے کیا اور انہیں قرآن پاک اور صحیح بخاری کے ترجمے کو مکمل کرنے میں تقریباً سات برس لگے۔

ڈاکٹر حامد چوئی یونگ کِل ایک مبلغ اور جنوبی کوریا کی ایک جامعہ میں اسلامیات اور عربی کے لیکچرار اور مبلغ ہیں۔ انہوں نے اپنی تعلیم اسلامی یونیورسٹی مدینہ منورہ سے حاصل کی تھی۔

ڈاکٹر حامد یونگ کی انتھک محنت کے سبب اب بالآخر کوریائی مسلمان اپنی مادری زبان میں قرآن پاک کو سمجھ کر پڑھ سکیں گے۔ انہوں نے قرآن پاک کے ساتھ ساتھ صحیح بخاری کا بھی کوریائی زبان میں ترجمہ جاری کیا ہے۔

ڈاکٹر یونگ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ یہ بہت ضروری تھا کہ کوریا میں رہنے والے غیر مسلم افراد اور مسلمان با آسانی اسلامی تعلیمات سیکھیں۔

کورین مسلم فیڈریشن کا کہنا ہے کہ جنوبی کوریا میں مسلمانوں کی تعداد رفتہ رفتہ بڑھ رہی ہے، حالانکہ جنوبی کوریا میں مسلمان اقلیت میں ہیں لیکن پچھلی دہائی میں ان کی تعداد میں بتدریج اضافہ ہوا ہے۔ کورین مسلم فیڈریشن کے مطابق اس وقت جنوبی کوریا میں 2 لاکھ مسلمان ہیں جو کہ کُل آبادی کا صرف صفر عشاریہ 38 فیصد ہیں۔

مذکورہ ادارے کا کہنا ہے کہ ان میں سے زیادہ تر مسلمان وہ طالب علم اور ملازمین ہیں جو ترکی، پاکستان اور ازبکستان سے آئے اور اب جنوبی کوریا کی شہریت اختیار کر چکے ہیں۔