پاک فوج کا ریلیف آپریشن، بڑی شاہراہیں کھول دی گئیں، آئی ایس پی آر

ملکہ کوہسار مری میں افسوسناک سانحہ ہونے کے بعد پاک فوج، پاک فضائیہ، ضلعی انتظامیہ اور ریسکیو ٹیموں‌کی جانب سے امدادی کارروائیاں جاری ہیں اور تمام بڑی شاہراہیں آمدورفت کیلئے کھول دی گئی ہیں۔

متاثرہ علاقوں میں برفانی طوفان میں پھنسی گاڑیوں اور سڑکوں سے کرینوں کی مدد سے برف ہٹائی گئی، سول آرمڈ فورسز سمیت اداروں کے اہلکار متحرک دکھائی دیئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ، آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ پاک فوج کے جوان امدادی کارروائیوں میں شانہ بشانہ ہیں، چھوٹی رابطہ سڑکوں کو کھولنے کا کام بھی جاری ہے جبکہ پھنسے ہوئے سیاحوں کو اسلام آباد منتقل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ مری میں ہونے والے سانحہ کے اگلے روز بھی امدادی سرگرمیاں جاری ہیں،سانحہ میں‌23قیمتی انسانی جانوں کا نقصان ہوا تھا.

آئی ایس پی آر کے جاری کردہ بیان کے مطابق مری میں ریلیف کیمپ قائم کردیئے گئے ہیں، انجینئرز سڑکیں کھولنے میں مصروف، سیاحوں کو محفوظ شیلٹر اور کھانے پینے کی اشیا کی فراہمی جاری ہے اور ریلیف کیمپوں اور صحت کے مراکز مکمل طور پر امور انجام دے رہے ہیں۔

ریسکیو آپریشن کے بعد پنڈی مری مین روڈ، ایکسپریس وے، جھیکا گلی، مال روڈ، بھوربن روڈ، ہال روڈ، ویو فورتھ روڈ اور کلڈانہ روڈ کو بحال کر دیا گیا ہے، مری کے متعدد علاقوں میں بجلی تاحال بحال نہیں ہو سکی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق سیاحتی مقام مری میں پیش آئے المناک سانحے میں لقمہ اجل بننے والوں کی میتیں ان کے آبائی علاقوں کو منتقل کر دی گئیں.