سعودی خواتین فٹبالرز کیلئے جرمن کوچ مقرر

گزشتہ چند برسوں میں‌سعودی عرب میں متعارف کرائی جانے والے اصلاحاتی پروگرام کے تحت اب ملک میں‌خواتین کو فٹبال میچ اسٹیڈیم میں دیکھنے کے ساتھ کھیلنے کی اجازت بھی ھدیدی گئی جس کے بعد خواتین فٹبالرز کو قومی اور عالمی فٹ بال مقابلوں‌ میں‌ شرکت کیلئے تربیت فراہم کرنے کا آغاز کردیا گیا ہے.

یاد رہے کہ سعودی عرب میں‌خواتین پر فٹ بال کھیلنے اور اسٹیڈیم میں جاکر میچ دیکھنے پر کئی عشروں سے پابندی عائد تھی.جسے گزشتہ چند برسوں‌میں سعودی بادشاہ محمد بن سلمان نے وژن 2030 کے تحت اصلاحاتی پروگرام کے طور پر ختم کیا اور کئی شعبوں میں اصلاحات متعارف کرائی گئیں ہیں جن میں سے خواتین کو کھیلوں سمیت دیگر شعبوں میں آگے بڑھنے کی حوصلہ افزائی کرنا شامل ہے.

اس سلسلے کے پیش نظر خواتین فٹبالرز کو قومی اور عالمی مقابلوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کیلئے تربیت فراہم کرنے کیلئے جرمنی سے تعلق رکھنے والی مونیکا اسٹاب کو قومی ٹیم کا کوچ مقرر کیا گیا ہے.

ریاض کے پرنس فیصل بن فہد اسٹیڈیم میں تربیتی سیشن کے دوران قومی ٹیم میں شامل خواتین فٹ بالر بننے کی اجازت ملنے کے بعد انتہائی خوشی کا اظہار کر رہی ہیں۔ خواتین فٹ بالرز کی 16 ٹیمیں ‘ویمنز سوکر لیگ‘ میں شامل ہوں گی۔ یہ ٹیمیں ریاض، جدہ اور دمام میں ہونے والے گیمز مں حصہ لیں گی۔